ہاتھوں کو دیکھ کر جانیے کیا آپ نمک زیادہ استعمال کر رہے ہیں؟

نمک کا استعمال

نیوزٹوڈے: زیادہ مقدار میں نمک کا استعمال صحت کے لیے خطرناک ہوسکتا ہے، لیکن ہمیں کب پتا چلتا ہے کہ ہم نے جسم کو مطلوبہ مقدار میں نمک فراہم کردی ہے یا نہیں؟کھانے میں زیادہ نمک شامل کرنا بلند فشار خون کے خطرات میں اضافہ کا باعث بن سکتا ہے اور کئی علامات ہیں جو اس بات کی نشانی ہوتی ہیں کہ جسم کے اندر نمک کی مقدار زیادہ ہوگئی ہے، ان میں سے ایک علامت ہوتی ہے کہ ہاتھوں اور پاؤں سوج جاتے ہیں۔

نمک جسم میں پانی کی مقدار میں اضافہ کرتا ہے جو اسباب بن سکتا ہے کہ ٹخنے، پیروں، اور ٹانگوں پر سوجن آ جائے۔نیشنل ہیلتھ سروسز کے مطابق، یہ سوجن خود بخود ختم ہوجاتی ہے، لیکن اگر کچھ دنوں تک یہ سوجن نہیں کم ہوتی تو یہ کسی سنجیدہ صحت کیفیت کی نشانی ہوتی ہے۔

غذائیت کے ماہر اولیویا برلے کے مطابق، نمک کی زیادہ مقدار سے جسم میں اضافی سوڈیم پایا جاتا ہے جس سے خلیوں کے گرد مائع کی مقدار بڑھ جاتی ہے، جس کا نتیجہ گردے کی کام کرنے کی کمی اور بلڈ پریشر کی اضافہ ہوتا ہے۔یہ کیفیت قلبی بیماری، دل کے دورے، فالج، شریانوں کی سوجن، گردے کی بیماری اور ڈیمینشیا جیسے خطرات میں اضافہ کرسکتی ہے، اور اس کی بڑی وجوہات میں سے ایک نمک کی زیادہ استعمال ہوتا ہے۔ادارے کی جانب سے جاری ہدایات کے مطابق، بڑی عمر کے افراد کو روزانہ 6 گرام سے زیادہ نمک کا استعمال نہیں کرنا چاہیے۔

user
صباحت عابد

تبصرے

بطور مہمان تبصرہ کریں:
+