روس ، یوکرین جنگ میں روس کا ساتھ دینے کیلیۓ

روس یوکرین جنگ کا آخری دور چل رہا ہے روس نے یوکرین پر ڈرون اٹیک کۓ

27 April,2022

روس نے جنگ کا دوسرا راؤنڈ شروع کر دیا ہے ۔ روس اور یوکرین کے درمیان 300 کلو میٹر کے دائرے میں جنگ شروع ہو چکی ہے ۔ دونوں فوجیں بارڈر پر ایک دوسرے کے آمنے سامنے آچکی ہیں ۔ لیکن اب سوال یہ ہے کہ اگر پیوٹن کو اس طرح بھی کامیابی حاصل نہ ہوئ تو ان کا اگلا قدم کیا ہو گا ؟ اس سوال نے تمام یورپ کو ہلا کر رکھ دیا کیونکہ پہلے ہی نیو سب مرین کی وڈیوز دیکھ کر دنیا حیران ہو چکی ہے ۔ دوسری خبر جس نے دنیا کو ہلا کر رکھ دیا وہ ہے ماسکو سے انٹر کانٹینینٹل میزائل کا ٹیسٹ ۔ یہ لانچر وکٹری پریڈ ری ہرسل کے نام پر نکالا گیا ۔ جو کہ 10  ہزار کلو میٹر تک مار کر سکتا ہے ۔

 

اور روس سے امریکہ کا فاصلہ صرف 8000 کلو میٹر ہے ۔ اس طرح اس لانچر کی گونج امریکہ میں بھی سنائ دے رہی ہے ۔ ایٹمی حملے کی دوسری بڑی وجہ یہ ہے کہ روس نے ایٹمی دھماکے کی دھمکی دے دی ہے ۔ یوکرین کے بارڈر پر روس کے بمبرز بھی دکھائ رے رہے ہیں ۔ ایئر سپیس بھی کلیئر ہے ۔ روس نے یوکرین میں جو تباہی مچائ ہے اسے دیکھ کر اس بات کا بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ روس یوکرین کو تباہ کر کے ہی چھوڑے گا ۔ ڈونباس میں دونوں طرف سے آخری دور کی جنگ شروع ہو چکی ہے ۔ یوکرین نے دعوَی کیا ہے کہ روس بیلا روس کی سرزمین سے گولے اور بارود برسا رہا ہے ۔ اب روس بلیو بیٹل گراؤنڈ میں بڑا حملہ کر سکتا ہے ۔

 

روس نے بوچا شہر کو بھی ملبے میں تبدیل کر دیا ہے ۔اور خارکیو پر بھی قبضہ کر لیا ہے ۔ اب گولہ ،بارود ،ٹینک اور میزائل کے بعد دونوں طرف سے ڈرون حملے بھی جاری ہیں یورپی ممالک یوکرین کو مدد فراہم کر رہے ہیں ۔ امریکہ کے صدر نے جاپان ، کینیڈا ، برطانیہ ، فرانس اور پولینڈ کے لیڈرز سے ملاقات کی جس میں انھوں نے واضح کر دیا ہے کہ یوکرین کو مدد جاری رکھی جاۓ گی ۔ پولینڈ نے بھی کہا ہے کہ وہ اپنے پڑوسی ملک کو اکیلا نہیں چھوڑ سکتے ۔ اور یوکرین پورے یورپ کیلۓ لڑ رہا ہے اس طرح کے بیانات جاری کر کے زیلینسکی کو اکسایا جا رہا ہے ۔ زیلینسکی نے ملک کو تباہ کرلیا ہے لیکن اس کے پاس کوئ پلان نہیں ہے ۔ جنگ جیتنے کیلۓ دو باتوں کا ہونا ضروری ہے ایک ہے منصوبہ بندی اور دوسری ہے طاقت ۔ اور زیلینسکی کے پاس دونوں ناپید ہیں ۔ زیلینسکی کو معلوم ہی نہیں ہے کہ یہ جنگ اصل میں روس اور امریکہ کی جنگ ہے اور وہ اس میں فٹ بال بنا ہوا ہے ۔ 

Share This Article