یوتھ ڈیویلپمنٹ فاؤنڈیشن کے زیرِ اہتمام پینل ڈسکشن کا انعقاد

13 May,2022

 

مؤرخہ  7 سے 10 مئی ،یوتھ ڈیویلپمنٹ فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام  چار دن  کے لیے پینل ڈسکشن کی نشریات کو نجی ٹی وی  پر جاری کیا گیا۔ ان چاروں پینل ڈسکشنزمیں ہر ایک  کا دورانیہ  45 منٹ کا  تھا اور ان کا مقصد معاشرے میں  ملکی ترقی اور تشخص  کو برقرار رکھنے  اور بہتر بنانے میں   تشدد اور نفرت انگیز خیالات اور واقعات کی روک تھام کس قدر ضروری ہے اور اس کے لیے مختلف  سماجی و قومی حلقوں  کی کیا ذمہ داریاں ہیں۔ 

 

ان سماجی  و قومی  حلقوں میں قانون نافذ کرنے والے ادارے، سماجی نتظیمیں، تعلیمی ادارے، مدارس، مذہبی رہنما، صحافتی حلقے، خواتین اور نوجوان شامل ہیں۔  چاروں پینل ڈسکشن  میں شرکا نے سب حلقوں اور اداروں کی الگ الگ ذمہ داریوں کو بیان  کیا اور  پاکستان میں بڑھتے ہوئے پر تشدد واقعات کے حل کے لیے انفرادی کوششوں کے ساتھ ساتھ اجتماعی اور دور رس اقدامات کو فروغ دینے پر زور دیا  گیا ۔  ان پینل ڈسکشن میں ملک کے مایہ ناز اور معروف مذہبی رہنماؤں اور امن کو فروغ دینے والی   شخصیات نے حصہ لیا ۔  جن میں  مولانا راغب نعیمی سربراہ جامعہ نعیمیہ، مولانا محمد حسین اکبر ممبر علماء بورڈ،  بشپ سبسٹین فرانسس شاء  آرچ بشپ لاہور، ڈاکٹر پروفیسر کلیان سنگھ کلیان  گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور، سید محمود غزنوی چیئرمین قومی کمیٹی براۓ مذہبی ہم آہنگی،   ڈاکٹر روحیہ مفیدی ، سیدہ زہرہ نقوی  اور دیگر شامل تھے۔

 

 مولانا راغب نعیمی  نے  دوران گفتگو کہا کہ  ہمارا معاشرہ ہمارے لیے، ہماری خواتین، بچوں، مردوں، خواجہ سراؤں، اور مختلف مذاہب سے تعلق رکھنے والے شہریوں کے لیے بےخوف ، خوشگوار اور صحت مند زندگی میسر کر سکتا ہے  اگر ہم سب ذمہ دار رویہ اختیا ر    کریں۔  مولانا محمد حسین اکبر نے کہا کہ     ہمارے معاشرے میں تشدد کا رویہ جس گہرے طریقے سے ہماری زندگیوں میں شامل ہو چکا ہے  اس کو ختم کرنے کے لیےہم سب کواپنی  اپنی ذمہ داریاں سرانجام دینی ہوں

 گی۔

 

  گفتگو میں شرکاء نے اظہار کیا کہ پُر تشدد  واقعات  کو فروغ دینے میں سوشل میڈیا کا اہم کردار ہے ۔    اس کے علاوہ  پاکستان میں ہونے والے پر تشدد واقعات میں ہجوم کی صورت میں ہیجان پیدا کرنے اور نفرت انگیزی پھیلانے پر گفتگو کی گئی اور اسکے سد باب کے لئے حل ڈھونڈنے پر  زور دیا گیا۔

 

Share This Article