مودی اقتدار کا ایک اور ظلم، بھارت میں مسلمانوں کے 25 گھر مسمار کردیے

عائشہ ظفر
31 October,2022

بریکنگ نیوز ٹوڈے:بھارت کے دارلحکومت دہلی میں مسلمانوں کے 25 گھروں کو بلڈوزر چلا کر تباہ کر دیا گیا اور گھروں میں رہنے والوں کو اپنا سامان تک نکالنے کی بھی مہلت نہ دی۔

 

تفصیلات کے مطابق بھارت کے میڈیا نے دہلی ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے فتح پور میں یہ کاروائی اس وقت ہوئی جب گھر کے مرد حظرات نماز پڑھنے کے لئے مسجد میں گئے تھے۔

 

خواتین نے مردوں کی غیر موجودگی میں احتجاج لیکن پولیس والوں نے خواتین کو بھی نہ بخشا اور لاٹھی چارج کیا۔

 

نیوز ٹوڈے:جب مرد نماز کی ادائیگی کے  بعد واپس آئے تو  اس احتجاج میں مرد بھی شامل ہوئے۔ پولیس اہلکار نے ان مرد حضرات کو گرفتار کر لیا۔اس کے علاوہ پولیس اہلکار نے دھمکیاں بھی دیں کہ اتر پردیش کے وزیرِ اعلی  کی طرح  دہلی میں بھی مسلمانوں کے گھروں کو تباہ کر دیا جائے گا۔

 

واضح رہے کہ مودی سرکار کا مسلمانوں پر دن بدن ظلم بڑھتا جا رہا ہے اس کے ساتھ ساتھ خواتین پر بھی تشدد کیا جا رہا ہے کبھی حجاب کے نام پر تو کبھی عبادت کے نام پر مسلمانوں کو ذلیل کرنا عام بات ہوگئی ہے۔

 

نیوز الرٹ ٹوڈے: یاد رہے اس سے قبل بھی مسلمانوں کو ٹرین میں عبادت کرنے سے روکا گیا تھا اور  مساجد میں داخل ہوکر ان پر ظلم کیا گیا تھا۔

 

مزید پڑھیں: بھارت کے علاقے موربی میں مچھو جھیل پر بنا پل ٹوٹنے سے سینکڑوں لوگ اپنی جانیں گنوا بیٹھے


 

Share This Article